بھیجی ہے جو مجھ کو شاہِ جَمِ جاہ نے دال (رباعی)
بھیجی ہے جو مجھ کو شاہِ جَمِ جاہ نے دال
ہے لُطف و عنایاتِ شہنشاہ پہ دال
یہ شاہ پسند دال بے بحث و جِدال
ہے دولت و دین و دانش و داد کی دال
اشعار کی تقطیع
تبصرے