اے منشئ خیرہ سر سخن ساز نہ ہو (رباعی)
اے منشئ خیرہ سر سخن ساز نہ ہو
عصفور ہے تو مقابلِ باز نہ ہو
آواز تیری نکلی اور آواز کے ساتھ
لاٹھی وہ لگی کہ جس میں آواز نہ ہو
اشعار کی تقطیع
تبصرے