ہم بے خودئ عشق میں کر لیتے ہیں سجدے (غزل)
ہم بے خودئ عشق میں کر لیتے ہیں سجدے
یہ ہم سے نہ پوچھو کہ کہاں ناصِیہ سا ہیں
اشعار کی تقطیع
تبصرے