زندانِ تحمل ہیں مہمانِ تغافل ہیں (شعر)
زندانِ تحمل ہیں مہمانِ تغافل ہیں
بے فائدہ یاروں کو فرقِ غم و شادی ہے
اشعار کی تقطیع
تبصرے