نہ لیوے گر خسِ جَوہر طراوت سبزۂ خط سے (قطعہ)
نہ لیوے گر خسِ جَوہر طراوت سبزۂ خط سے
لگا دے خانۂ آئینہ میں رُوئے نگار آتِش
فروغِ حُسن سے ہوتی ہے حلِّ مُشکلِ عاشق
نہ نکلے شمع کے پاسے ، نکالے گر نہ خار آتش
اشعار کی تقطیع
تبصرے